برفانی طوفان کا دوسرا الرٹ جاری! مری کیلئے نیا ٹریفک پلان

0 557

گزشتہ ہفتے سانحہ مری میں 22 سیاح جان کی بازی ہار گئے تھے۔ ہزاروں دوسرے لوگ گھنٹوں، یہاں تک کہ کئی دنوں تک شدید برفباری میں پھنسے رہے۔ جس کے بعد اب ایک اور برفانی طوفان کی پیشگوئی ہے اور راولپنڈی ٹریفک پولیس نے مری کے لیے ایک ٹریفک پلان تیار کیا ہے تاکہ ہل اسٹیشن پر موجود ہر شخص کو محفوظ رکھا جا سکے۔

چیف ٹریفک آفیسر (سی ٹی او) تیمور خان نے مری کے نئے ٹریفک پلان کا جائزہ لیا جس کے مطابق:

  • مری ہلز میں روزانہ صرف 8000 گاڑیوں کو داخلے کی اجازت ہوگی۔
  • مری میں صرف لائسنس یافتہ ڈرائیوروں کو داخلے کی اجازت ہوگی۔
  • شام 5 بجے سے صبح 5 بجے کے درمیان سیاحوں کو آنے کی اجازت نہیں ہوگی۔
  • 268 ٹریفک اور ضلعی پولیس اہلکار سیاحوں کی مدد کے لیے ڈیوٹی پر مامور ہوں گے۔

سی ٹی او نے حکام کو مری ٹول پلازہ اور دیگر انٹری پوائنٹس پر سیاحوں میں آگاہی کیلئے بروشرز تقسیم کرنے اور برف ہٹانے کے لیے بھاری مشینری تعینات کرنے کا حکم دیا ہے۔

 

Advisory for Murree Tourists

سی ٹی او راولپنڈی نے سیاحوں کو مندرجہ ذیل باتوں کا خیال رکھنے کا مشورہ دیا ہے۔

  • مری ہل سٹیشن جانے سے پہلے موسم اور ٹریفک کے حالات کا جائزہ لیں۔
  • مری جانے کے لیے مکینیکلی طور پر فٹ کاروں کا انتخاب کریں۔
  • ہل سٹیشن پر جاتے وقت فیول ٹینک کو فل کروا لیں۔
  • کسی بھی ہنگامی حالت سے نمٹنے کے لیے ٹول کٹ کو اپنی گاڑی میں ضرور رکھیں۔
  • برفباری کے دوران اپنی گاڑیاں سڑکوں پر نہ کھڑی کریں۔
  • ون وے ٹریفک قوانین کی خلاف ورزی نہ کریں اور اوور ٹیکنگ سے گریز کریں۔
  • سیلفیز اور تصاویر لینے کے لیے اپنی گاڑی کو سڑک کے بیچ میں نہ روکیں۔
  • اپنی گاڑی میں گرم کپڑے اور کھانے کی اشیاء رکھیں۔
  • آدھی کھلی کھڑکیوں کے ساتھ کار ہیٹر کا استعمال کریں۔
  • پھسلن والی سڑکوں پر گاڑی چلانے کے لیے ٹائروں کے لیے برف کی زنجیروں کا استعمال کریں۔
  • برف ہٹانے والی مشینوں کو راستہ دیں۔

ایمرجنسی کی صورت میں ٹریفک پولیس کی ہیلپ لائن 051-9269200 پر رابطہ کریں۔

سی ٹی او نے سیاحوں سے درخواست کی ہے کہ وہ اپنے سفر کو محفوظ بنانے کے لیے ایڈوائزری پر عمل کریں۔ اگر آپ مری کا سفر کر رہے ہیں تو شدید برف باری اور ٹریفک جام سے ہوشیار رہیں۔

Google App Store App Store

جواب چھوڑیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا.