پٹرول قیمتوں میں 3.20 روپے فی لیٹر کا اضافہ

0 3 421

وفاقی حکومت نے ایک مرتبہ پھر پٹرول کی قیمتوں میں اضافہ کر دیا ہے۔ وزارت خزانہ کے جاری کردہ نوٹیفکیشن کے مطابق حکومت نے پٹرول کی قیمت میں 3.20 روپے فی لیٹر کا اضافہ کیا ہے، جبکہ ہائی اسپیڈ ڈیزل (HSD) کی قیمت میں 2.95 روپے، مٹی کے تیل میں 3 روپے اور لائٹ ڈیزل آئل (LDO) کی قیمت میں 4.42 روپے فی لیٹر کا اضافہ کیا گیا ہے۔

نئی قیمتیں 16 جنوری 2021ء سے لاگو ہوں گی۔

نئی پٹرول قیمتیں:

اس تازہ ترین اضافے کے بعد پٹرول کی قیمت 109.20 روپے ہو جائے گی جبکہ HSD کی نئی قیمت 113.19 روپے فی لیٹر ہے۔ اس کے علاوہ مٹی کے تیل کی نئی قیمت 76.65 روپے ہے اور لائٹ ڈیزل آئل اب 76.23 روپے فی لیٹر کا پڑے گا۔

New Prices

اوگرا سمری:

اس سے پہلے میڈیا پر آنے والی خبروں اور ذرائع نے دعویٰ کیا تھا کہ پٹرول کی قیمت کل سے 11.95 روپے فی لیٹر تک بڑھ سکتی ہیں۔ ذرائع کا کہنا تھا کہ آئل اینڈ گیس ریگولیٹری اتھارٹی (اوگرا) نے وزارت خزانہ کو بھیجی گئی ایک سمری میں اضافے کی سفارش کی تھی۔

ذرائع نے مزید دعویٰ کیا تھا کہ اوگرا نے ڈیزل کی قیمت میں 9.57 روپے فی لیٹر کا اضافہ تجویز کیا تھا۔ ڈاکٹر عبد الحفیظ شیخ کی زیر صدارت وزارت خزانہ نے وزیر اعظم عمران خان سے مشاورت کے بعد حتمی فیصلہ کیا۔

پٹرول کی قیمت میں گزشتہ اضافے:

30 دسمبر کو وفاقی حکومت نے پٹرول کی قیمت میں 3 روپے فی لیٹر کا اضافہ کیا تھا۔ نئی قیمت یکم جنوری 2020ء سے لاگو ہوئی۔ وزارتِ خزانہ کے اعلان کے مطابق تمام پٹرولیم مصنوعات کی قیمتوں میں 3 سے 8 فیصد کا اضافہ ہوا تھا۔

نوٹیفکیشن کے مطابق ہائی اسپیڈ ڈیزل (HSD) کی قیمت میں 3 روپے کا اضافہ کیا گیا تھا۔ جبکہ مٹی کے تیل اور لائٹ ڈیزل آئل (LDO) کی قیمت میں 5، 5 روپے کا اضافہ ہوا تھا۔

اس دوران حکومت نے اپنے ریونیو پر کافی نقصان اٹھایا، کیونکہ اس نے پٹرولیم لیوی کم کر دی تھی۔ وزارت کا کہنا تھا کہ پٹرول پر لیوی میں 4.50 روپے اور HSD پر 2.51 روپے فی لیٹر کی کمی کی گئی۔ اس کے علاوہ مٹی کے تیل پر لیوی 55 پیسہ فی لیٹر کم کی گئی اور LDO پر 65 پیسے فی لیٹر کا اضافہ کیا گیا۔

 

Google App Store App Store

جواب چھوڑیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا.