ٹویوٹا کرولا میں متعدد خصوصیات کا اضافہ؛ قیمتیں بھی بڑھادی گئیں!

Altis-Grande-New 1

ٹویوٹا انڈس موٹر نے اپنی مقبول ترین گاڑی ٹویوٹا کرولا کے مختلف ماڈلز کی قیمتوں میں 20 ہزار سے 60 ہزار روپے تک اضافہ کردیا ہے۔ نئی اضافی قیمتوں کا اطلاق یکم مئی 2016 سے ہو گا۔اس کے ساتھ ساتھ ٹویوٹا کرولا میں معمولی لیکن متعدد خصوصیات بھی شامل ہوں گی۔ ہمارے قارئین پاک ویلز پر موجود صفحہ سے ٹویوٹا کرولا کی نئی قیمتیں دیکھ سکتے ہیں۔

سب سے دلچسپ اور قابل ستائش خبر یہ ہے ٹویوٹا کرولا میں نئی خصوصیات شامل کی جارہی ہیں۔ ٹویوٹا کرولا کا سب سے بہترین ماڈل، جسے ٹویوٹا گرانڈے (Toyota Grande) کے نام سے بھی جانا جاتا ہے، میں قابل ذکر خصوصیات کا اضافہ کیا جا رہا ہے۔ ان میں خود کار سائیڈ مررز جو گاڑی کا انجن بند ہونے کے ساتھ ہی ازخود بند ہوجاتے ہیں، تہہ (فولڈ) ہوجانے والی چابی، اسٹیئرنگ کے 2 اطراف فنکشنز اور سب سے زیادہ قابل ذکر نیا ایئر کنڈیشن، دہرے SRS ایئربیگز اور اموبلائزر (Immobilizer) شامل ہیں۔

یہ بھی پڑھیں: ہونڈا سِوک اوریئل پروسمیٹک بمقابلہ ٹویوٹا کرولا آلٹس گرانڈے

کرولا کے دیگر ماڈلز میں بھی ان میں سے چند ایک خصوصیات شامل کی جائیں گی۔ ٹویوٹا کرولا کا شمار پاکستان میں سب سے زیادہ چوری ہونے والی گاڑیوں میں کیا جاتا ہے۔ شاید یہی وجہ ہے کہ اس بار ٹویوٹا کرولا میں اموبلائزر شامل کرنے کا فیصلہ کیا ہے۔

ٹویوٹا کرولا (Toyota Corolla) کی فروخت دیکھتے ہوئے اندازہ لگایا جاسکتا ہے کہ یہ تبدیلیاں محض فروخت میں اضافے کا ہدف سامنے رکھتے ہوئے نہیں کی گئیں۔ ٹویوٹا انڈس موٹرز پہلے ہی مارچ اور اپریل کے لیے کرولا کی بکنگ مکمل ہوچکی ہے۔ سال 2015 میں 57,000 ٹویوٹا کرولا فروخت ہونے کے بعد تو یہ خیال بالکل غیر ضروری ہے۔

انڈس موٹرز کی جانب سے کرولا میں شامل کی جانے والی خصوصیات دراصل صارفین کی خواہشات کو دیکھتے ہوئے شامل کی گئیں ہیں۔ ٹویوٹا کے صارفین سے موصول ہونے والے ردعمل کے بعد ان خصوصیات کو مئی 2016 سے شامل کرنے کا فیصلہ کیا گیا ہے۔ چونکہ کرولا کے تمام ماڈلز میں ہونے والی تبدیلیاں تکنیکی نوعیت کی ہیں اور ظاہری انداز میں کوئی فرق نہیں، اس لیے اسے نیا انداز (فیس لفٹ) نہیں کہا جاسکتا۔

پاک ویلز کے تجزیہ کار اسے نئی ہونڈا سِوک کی آمد سے قبل ٹویوٹا کی پیشگی تیاریاں قرار دے رہے ہیں۔ پاکستان میں کرولا کا نیا ماڈل متعارف کروانے پر سات ارب روپے سرمایہ صرف ہوا تھا۔ ایک اندازے کے مطابق پاکستان میں نئی سِوک 2016 متعارف کروانے کے لیے ہونڈا مجموعی سرمایہ کاری کا 85 فیصد حصہ پہلے ہی صرف کرچکا ہے۔

ہونڈا سِوک (Honda Civic) اور ٹویوٹا کرولا گاڑیوں کے شعبے میں سب سے پرانے حریف سمجھے جاتے ہیں اور ان میں سے کسی بھی ایک کی غیر حاضری مارکیٹ کو کافی پھیکا بنا دے گی۔ نئی ہونڈا سِوک عالمی سطح پر زبردست داد و تحسین وصول کر رہی ہے اور اسے دیکھتے ہوئے ٹویوٹا بھی متعدد اقدامات اٹھا رہا ہے تاکہ نئی سِوک جب یہاں قدم رکھے تو کرولا اس کا مقابلہ کرنے کے لیے پہلے ہی سے تیار ہو۔

Baber K. Khan

An auto enthusiast trying to bring car media mainstream.

Top