وزیر اعلیٰ خیبر پختونخوا نے 339 کلومیٹرز طویل پشاور-ڈیرہ اسماعیل خان موٹر وے کی منظوری دے دی


وزیر اعلیٰ خیبر پختونخوا محمود خان نے 339 کلومیٹرز طویل پشاور-ڈیرہ اسماعیل خان موٹر وے کی تعمیر کی منظوری دے دی ہے۔ 

تفصیلات کے مطابق وزیر اعلیٰ سیکریٹریٹ میں ہونے والے اجلاس میں وزیر اعلیٰ خیبر پختونخوا نے علاقے کے قانون ساز نمائندوں سے ملاقات کی کہ جس میں موٹر وے کی تعمیر کے لیے گرین سگنل دیا گیا۔ اس موقع پر ترجمان حکومت اجمل وزیر اور وزیر مملکت برائے ریاست و سرحدی علاقہ جات نے بتایا کہ یہ میگا پروجیکٹ ملک میں اقتصادی سرگرمیوں کی ترویج کے لیے نیا دروازہ کھولے گا۔ 

میگا پروجیکٹ صوبے کے دوسرے علاقوں سے علاقے کے بہتر انداز میں منسلک ہونے کا کام کرے گا۔ پشاور-ڈیرہ اسماعیل خان موٹر وے منصوبے کی کل لاگت تقریباً 250 ارب روپے ہے۔ اجلاس میں موٹر وے الائنمنٹ، بشمول انٹرچینجز پر بھی بات کی گئی۔ وزیر اعلیٰ نے متعلقہ حکام کو موٹر وے کے راستے پر انٹرچینجز کے مقامات کو حتمی صورت دینے کی بھی ہدایت کی۔ مزید یہ کہ ڈیزائن پیرامیٹرز، سرنگوں کے مقامات اور اس حوالے سے دیگر معاملات بھی اجلاس کے دوران زیر گفتگو آئے۔ 

339 کلومیٹرز طویل موٹروے پشاور کے علاقے چمکنی سے شروع ہوگی۔ یہاں سے یہ درہ آدم خیل، کوہاٹ، ہنگو، کرک بنوں، لکی مروَت اور ٹانک سے ہوتی ہوئی ڈیرہ اسماعیل خان پہنچے گی۔ اس کی بدولت صوبے کے جنوبی اضلاع کو بہت فائدہ ہوگا۔ موٹروے میں تقریباً 14 انٹرچینج ہوں گے۔ اب تک حکومت نے اس منصوبے کی منظوری ہی دی ہے؛ البتہ اس کی فزیبلٹی بعد میں تیار کی جائے گی۔ 

پشاور-ڈیرہ اسماعیل خان موٹر وے کی تعمیر علاقے کی ترقی کے ساتھ ساتھ عوام کو تیز سفر اور نقل و حمل بھی فراہم کرے گی۔ یہ علاقے میں سیاحت و تجارت کو بھی فروغ دے گی اور یوں ملک کے لیے ریونیو کلیکشن کا اہم ذریعہ بنے گی۔ یہ اہم منصوبہ نئے مواقع تخلیق کرکے ملک کے غربت زندہ علاقوں کی قسمت بدلنے کی صلاحیت رکھتا ہے۔ 

اس منظور شدہ موٹر وے منصوبے کے بارے میں اپنے خیالات نیچے تبصروں میں پیش کیجیے۔ آٹوموبائل انڈسٹری کی مزید خبروں کے لیے پاک ویلز پر آتے رہیے۔ 


Google App Store App Store

Apart from being an Electrical Engineer by profession, he is an automotive content writer at PakWheels, a web designer and a photographer.

Top