سی ٹی پی لاہور نے ای-چالان ادا نہ کرنے والوں کے لیے اسپیشل اسکواڈ بنا دیا


ای-چالان نادہندگان کو سزا دینے کے لیے سٹی ٹریفک پولیس (CTP) لاہور نے 17 اسپیشل اسکواڈ بنا دیے ہیں اور شہر بھر میں 34 ٹریفک وارڈنز تعینات کردیے ہیں۔ 

تفصیلات کے مطابق ان نادہندگان نے اپنے ای-چالان جمع نہیں کروائے جس کی وجہ سے حکام مجبور  ہو گئے ہیں کہ ان کے خلاف قانونی کارروائی شروع کردیں۔ سٹی ٹریفک پولیس لاہور نے ایسی تمام گاڑیاں فوری طور پر ضبط کرنے کا حکم دیا ہے۔ ابتدائی مرحلے میں ان تمام گاڑیوں کے مالکان کے خلاف قانونی کارروائی عمل میں لائی جائے گی جن کے سب سے زیادہ غیر ادا شدہ چالان ہیں۔ نادہندہ گاڑی کی تمام دستاویزات غیر ادا شدہ ای-چالان کی مالک کی جانب سے مکمل ادائیگی تک ضبط کرلی جائیں گی۔ ایسے افراد کے خلاف یہ کریک ڈاؤن سختی سے روزانہ کی بنیاد پر ہوگا۔ 

الیکٹرانک چالان سسٹم ستمبر 2018ء سے صوبائی دارالحکومت میں لاگو ہوا اور تب سے اس نے سڑکوں پر ٹریفک قوانین کی خلاف ورزی کرنے والوں کو شناخت کرنے اور شہریوں کو تحفظ دینے میں اہم کردار ادا کیا ہے۔ پنجاب سیف سٹی اتھارٹی (PSCA) نے شہر بھر میں CCTV کیمروں کی تنصیب کا آغاز کیا کہ جس کا مانیٹرنگ یونٹ لاہور میں اس کے ہیڈ کوارٹرز میں لگایا گیا۔ ای-چالان سسٹم ٹریفک قوانین کے حوالے سے عوام کو شعور دینے کا ایک مؤثر طریقہ بن چکا ہے کیونکہ اس نے ہزاروں افراد کو بھاری جرمانے کیے۔ نتیجتاً شہریوں نے ڈرائیونگ کے دوران ذمہ داری کا مظاہرہ کرنا شروع کردیا۔ 

ایک ذمہ دار شہری  کی حیثیت سے ہمیں بھی اپنا کردار ادا کرنا چاہیے اور تمام ٹریفک قوانین کی پیروی کرنی چاہیے کہ جو ہماری ہی حفاظت کے لیے بنائے گئے ہیں۔ مزید برآں، ہمیں کسی بھی مسئلے سے بچنے کے لیے اپنے ای-چالان مقررہ مدت کے اندر ادا کرنے چاہئیں۔ 

مزید برآں یہ امر بھی قابلِ ذکر ہے کہ  اگر آپ اپنی کار فروخت کر رہے ہوں تو کبھی بھی گاڑی کو نئے مالک کے نام پر منتقل کروانا نہ بھولیں۔ بصورتِ دیگر سسٹم آپ کے نام پر ای-چالان جاری کرے گا اور یہ آپ کے پتے پر پہنچے گا۔

اس حوالے سے اپنے قیمتی رائے نیچے تبصروں میں پیش کیجیے۔ مزید خبروں کے لیے پاک ویلز کے ساتھ رہیے۔


Google App Store App Store

Apart from being an Electrical Engineer by profession, he is an automotive content writer at PakWheels, a web designer and a photographer.

Top