کِیا کا پیداواری پلانٹ 20 ارب روپے میں مکمل ہو گیا


کِیا کے چیف آپریٹنگ آفیسر (COO) کے مطابق کِیا کا نیا پلانٹ کُل 20 ارب روپے کی لاگت سے اور ڈیڑھ سال کے عرصے میں تیار ہو چکا ہے۔ یہ پلانٹ یونس برادرز گروپ اور جنوبی کوریا کے کِیا کا جوائنٹ وینچر ہے۔ پلانٹ 50,000 یونٹس کی گنجائش رکھتا ہے۔ کِیا موٹرز نے پاکستان کے 11 شہروں میں 18 ڈیلرشپ معاہدے کیے ہیں۔ کِیا کے چیف آپریٹنگ آفیسر نے زور دیا کہ کمپنی پاکستان میں آٹوموٹِو سیکٹر کے معیارات کو بڑھانے کا ہدف رکھتی ہے۔ 

COO نے پاکستان کی معیشت میں آٹوموبائل سیکٹر کی اہمیت پر زور دیا اور یہ بھی کہ یہ شعبہ کس طرح پاکستان میں ترقی لا سکتا ہے۔ 

پاکستان میں کِیا موٹرز کی ممکنہ کامیابی کے ساتھ ملک کے آٹو سیکٹر میں صحت مند مسابقت کی فضاء پروان چڑھے گی۔ جہاں تک آٹو سیکٹر میں طلب کا تعلق ہے تو رسد اور طلب میں اب بھی فرق بہت زیادہ ہے کہ جس کو کِیا موٹرز جیسے نئے ادارے پورا کر سکتے ہیں۔ یہ صارفین کے لیے بھی فائدہ مند ہوگا کیونکہ انہیں اپنی گاڑیوں کی فراہمی کے لیے طویل انتظار نہیں کرنا پڑے گا۔ 

کِیا اب تک پاکستان میں تین گاڑیاں لانچ کر چکا ہے جس میں اسپورٹیج، کارنیوَل اورپکانٹو شامل ہیں۔ اسپورٹیج ایک مناسب کومپیکٹ SUV ہے جو پانچ افراد کے بیٹھنے کی گنجائش رکھتی ہے اور 2.0L انجن کے ساتھ آتی ہے۔ یہ ٹُو-ویل اور آل-ویل ڈرائیو دونوں میں آتی ہے۔ اسپورٹیج اپنی تعارفی قیمت کی وجہ سے جلد ہی مقبول ہوئی۔ یہ پینورامک سن رُوف رکھنے والی پہلی مقامی طور پر اسمبل کی گئی SUVs میں سے ایک ہے۔ یہ ظاہر کرتا ہے کہ پاکستان کا آٹو سیکٹر وقت کے ساتھ تبدیل ہو رہا ہے۔ 

کارنیوَل ایک MPV ہے اور پکانٹو ایک چھوٹی فیملی ہیچ بیک ہے جو سوزوکی کلٹس اور ویگن آر کا مقابلہ کرنے کے لیے تیار ہے۔ 

اپنے خیالات نیچے تبصروں میں پیش کیجیے اور مزید معلومات اور خبروں کے لیے پاک ویلز کے ساتھ رہیے۔


Google App Store App Store

  • Omego Brovo

    ma sha Allah i am very happy to know our cars mafia chore mafia should be down and finish en logo nay
    mammary saith bohat zulam kia ha.

Top