کِیا اسپورٹیج 2019ء آل وِیل ڈرائیو اپنے مالک کی نظر سے: خصوصیات و تفصیلات


کِیا اسپورٹیج اپنے زبردست پریمیم فیچرز کے ساتھ دو ویرینٹس میں پاکستان میں متعارف کروائی گئی۔ اس کے فرنٹ وِیل ڈرائیو ماڈل کی قیمت 48,99,000 روپے ہے جبکہ آل-وِیل ڈرائیو 53,99,000 روپے کا ہے۔ 

انٹیریئر اور فیچرز 

کِیا اسپورٹیج بڑے لیگ رُوم اور سیٹوں کی پوزیشن کے لحاظ سےایک زیادہ کشادہ ٹویوٹا فورچیونر ہے۔ اس کی چمڑے کی سیٹیں بہت آرام دہ ہیں جبکہ ڈرائیور اور اس کے ساتھ بیٹھنے والے مسافر کی سیٹیں دونوں الیکٹریکل ایڈجسٹمنٹ رکھتی ہیں۔ اس میں ایک بڑی پینورامک سن رُوف بھی ہے، جس سے اس گاڑی میں بیٹھ کر اس کے زیادہ کشادہ ہونے کا احساس ملتا ہے اور آگے بیٹھنے والوں کے علاوہ پیچھے بیٹھے مسافروں کو بھی یہ گاڑی کھلی کھلی لگتی ہے۔ ڈیش بورڈ کا درمیانی حصہ 7.2 درجے کے زاویے کے ساتھ سیدھا آپ کی جانب رخ کرتا ہے تاکہ آڈیو، نیوی گیشن اور ایئر کنڈیشننگ سسٹمز سب آپ کی پہنچ میں رہیں۔ 

ڈوئل زون فُل آٹو ٹمپریچر کنٹرول آپ کو ایئر کنڈیشنر اور ہیٹر کو سَیٹ کرنے کی پریشانی بھلا دیتا ہے، کیونکہ یہ خودکار طور پر کھلتا اور بند ہوتا ہے تاکہ آپ اور مسافروں کے لیے ہر وقت بہترین درجہ حرارت کو ممکن بنا سکے۔ آل وِیل کِیا اگلے اور پچھلے حصے میں پارکنگ سینسرز کے ساتھ آتی ہے لیکن پیچھے گائیڈلائنز رکھنے والا محض ایک کیمرا ہے۔ ہیڈ لیمپس اس طرح بنائے گئے ہیں کہ یہ باہر موجود روشنی کے مطابق کام کرتے ہیں اور رات کے ڈرائیونگ کو بہتر بنانے کے لیے خود کار طور پر ایڈجسٹ ہو جاتے ہیں۔ یہ اس ماڈل میں جمالیاتی لحاظ سے ایک اہم اضافہ ہے اور کار کے ایکسٹیریئر کے لیے بھی بہترین ہیں۔ یہ ماڈل وہ تمام فیچرز رکھتا ہے جن کی آپ کو ضرورت ہے جیسا کہ پُش اسٹارٹ، آٹو بریک ہولڈ، پارکنگ بریک بٹن، کرُوز کنٹرول اور بہت کچھ۔ 

اس گاڑی کا آڈیو سسٹم بھی مقابلے کی دوڑ میں سب سے آگے نظر آتا ہے۔ اس میں بہت تیز، واضح اور ہائی ریزولیوشن اسکرین ہے اور یہ کئی عمدہ آپشنز کے ساتھ آتی ہے۔ مثلاً آڈیو سسٹم میں کار پلے موجود ہے جو آپ کے فون سے براہِ راست جڑ جاتا ہے اور آپ کا فون کی ایک نقل کار کی اسکرین پر آ جاتی ہے۔ میپس، گوگل میپس وغیرہ اسکرین پر ہی نظر آ جائیں گے اور راستے کی تمام معلومات پیش کریں گے۔ ایک اور اہم فیچر یہ ہے کہ اپنے کار اسپیکر کے ذریعے آپ کو واٹس آپ میسیج پڑھ کر سنائے گا تاکہ آپ کی توجہ ڈرائیونگ پر ہی رہے۔ اور ہاں! اگر آپ پرائیویسی چاہتے ہیں یا پھر اپنے فون کو سرے سے ہی اس سسٹم سے نہیں جوڑنا چاہتے تو آپ ان فیچرز کو بند بھی کر سکتے ہیں۔ لیکن یہ بات جان لیں کہ اس کار کا بلوٹوتھ اسپیکر سسٹم بہت اچھا ہے۔ اتنا اچھا کہ کار کا ہینڈز فری فیچر استعمال کرتے ہوئے دوسری جانب موجود کالر کو پتہ ہی نہیں چلتا کہ آپ دراصل بلوٹوتھ وائرلیس اسپیکر استعمال کر رہے ہیں۔ یہ آپ کی مصروف زندگی میں ایک بہت ضروری فیچر ہے جہاں آپ ڈرائیونگ کے دوران کالز بھی وصول کر سکتے ہیں اور سڑک پر اپنی توجہ بھی برقرار رکھ سکتے ہیں! 

ویڈیو جائزہ یہاں دیکھیں: 

ایکسٹیریئر اور کارکردگی

کِیا اسپورٹیج 2019ء سڑک پر چلتے ہوئے پورشَ کاین (Porsche Cayenne) کا چھوٹا ورژن لگتی ہے۔ آپ جیسے ہی گاڑی کے قریب آتے ہیں تو اسپورٹیج کا اسمارٹ ویلکم سسٹم جاگ اٹھتا ہے۔ ہماری سڑکوں کے لیے یہ 172mm کی متاثر کُن گراؤنڈ کلیئرنس رکھتی ہے۔ یہ کار آٹو وائپرز سے لیس ہے جو کہ وِنڈ اسکرین پر بارش کا احساس ہوتے ہی خود بخود کام کرنا شروع کر دیتے ہیں۔ 2.0 لیٹر انجن کے ساتھ اسپورٹیج 11 سے 12 کلومیٹرز فی لیٹر کا مناسب اوسط دیتی ہے۔ اس کا انتہائی نفیس آٹو ڈی-فوگر سینسرز وِنڈ اسکرین پر موجود دھند کا اندازہ لگاتا ہے اور اسے خودکار طور پر صاف کر دیتا ہے۔ یوں آپ کو ڈرائیونگ کے دوران ہر وقت واضح نظر آنے میں مدد ملتی ہے۔ ایڈوانس ٹریکشن کارنرنگ کنٹرول سڑک کی حالت کا جائزہ لیتا رہتا ہے اور یقینی بناتا ہے کہ پہیے پر ٹارک کی مقدار درست ہے اور گاڑی کی سڑک پر گرفت اچھی ہے اور وہ قابو سے باہر نہیں ہوگی۔ اسپورٹیج کا ABS پہیے کو بریکنگ کے دوران لاک ہونے سے بچانے اور یوں سڑک کی سطح پر ٹریکشن کو برقرار رکھنے میں مدددیتا ہے۔ ہیٹڈ وِنگ مرر دھند کےدوران شیشوں کو صاف رکھتا ہے تاکہ ان سے باآسانی نظر آئے۔ 

رِی سیل اور پارٹس کی دستیابی 

کیونکہ یہ کار مارکیٹ میں نئی نئی آئی ہے اس لیے مارکیٹ میں اس کے پارٹس یعنی پرزے باآسانی دستیاب نہیں ہیں اور بہت سارے ڈیلرز کے پاس اس کے پرزوں کا اسٹاک نہیں۔ پھر یہ پرزے ذرا مہنگے بھی مل رہے ہیں۔ جیسا کہ فرنٹ ہیڈلائٹس کو ہی لے لیں کہ اگر یہ ٹوٹ جائیں تو آپ کو 1,60,000 روپے کی پڑیں گی۔ 

مارکیٹ میں نئی نئی گاڑی ہونا اور بہت زیادہ لوگوں کا اس سے واقف نہ ہونا اس کی رِی سیل پر بھی اثر انداز ہو سکتا ہے۔


Google App Store App Store

Top