نہیں ، زوتیے نے پاکستان میں الیکٹرک کار لانچ نہیں کی؟

Pakistan's first electric car company Topsun Motors

کہانی پر جانے سے پہلے ، آئیے یہاں ایک چیز صاف کریں اور وہ ہے؛ ملک میں کمپنی نے کوئی الیکٹرک کار لانچ نہیں کی ہے جیسا کہ بہت سارے میڈیا آؤٹ لیٹس نے رپورٹ کیا ہے۔ وہ ای وی پالیسی پر عمل درآمد کے بعد الیکٹرک کار لانچ کرنے کا منصوبہ بنا رہے ہیں۔

ٹوپسن موٹرز نے 3 جنوری 2020 کو جیل روڈ لاہور میں اپنے شوروم کا افتتاح کیا ہے ، جہاں سے مستقبل میں کمپنی الیکٹرک گاڑیاں بیچنے کا ارادہ رکھتی ہے۔

 صوبائی وزیر برائے تعمیرات، شہری ترقی و عوامی صحت میاں محمود الرشید نے ٹاپ سن موٹرز کے شو روم کا افتتاح کیا۔ 

وزیر نے ٹیکنالوجیکل جدّت کے سلسلے میں   پاکستان کی مدد کرنے پر پڑوسی ملک کی کوششوں کو سراہا۔ انہوں نے مزید کہا کہ یہ چین کے ساتھ تعلقات کو مضبوط کرنے میں بھی مدد دے گا۔ اس کے علاوہ چینی کمپنی پاکستان میں سرمایہ کاری منصوبوں میں گہری دلچسپی بھی دکھا رہی ہیں۔

اس افتتاحی پروگرام میں ، 4 ماڈلز متعارف کروائے گئے جن میں ہیچ بیک اور جے ایم سی کے تین ماڈل شامل تھے۔

زوتیے Z100: 14,90,000 روپے 

JMC سنگل کیبن: 29,50,000 روپے 

JMC ڈبل کیبن: 39,50,000 روپے 

JMC ویگس 2.4 لٹر: 50,15,000 روپے 

زیوٹی Z100 کی خصوصی تصاویر یہاں دیکھیں کہ جو چار رنگوں میں دستیاب ہے: 

یہ امر قابلِ ذکر ہے کہ یہ گاڑیاں انجن پر مبنی ہیں اور مندرجہ بالا قیمت میں وِد ہولڈنگ ٹیکس شامل ہے۔ اس کے علاوہ کمپنی حکومت کی جانب سے الیکٹرک وہیکل پالیسی نافذ کرے کا انتظار کر رہی ہے اور اس کے بعد الیکٹرک ورژن پیش کیے جائیں گے۔ Z100 کا 

کمپنی دعویٰ کرتی ہے کہ زوتیے Z100 کا الیکٹرک ورژن ایک مرتبہ بیٹری چارج ہونے پر 300 کلومیٹر  کا احاطہ کرے گا اور اس کی قیمت 19 سے 20 لاکھ روپے ہوگی۔ البتہ اس کی قیمت الیکٹرک وہیکل پالیسی کے نفاذ کے بعد لاگو ہونے والے ٹیکس کے مطابق مختلف ہو سکتی ہے۔ زوتیے Z100 کا موجودہ ماڈل 1000cc انجن پر مبنی ہے جو 5-اسپیڈ مینوئل ٹرانسمیشن رکھتا ہے۔ کمپنی دوسرے مرحلے میں Z100 کا آٹومیٹک ورژن لائے گی۔واضح رہے کہ یہ مکمل طور پر بلٹ یونٹس (CBUs) ہیں کہ جو کمپنی نے درآمد کیے ہیں۔ یہ ہیچ بیک سوزوکی ویگن آر اور سوزوکی کلٹس کے زمرے میں آتی ہے۔ لوکل سیکٹر میں اس کے دیگر مقابل فا V2 اور کِیا پکانٹو ہیں۔ البتہ اس کی قیمت مارکیٹ میں موجود ماڈلز سے کم ہے۔ دوسری جانب JMC ویگس 4×4 ایک 2.4 لٹر انجن ٹوئن پاور چارجر پر مبنی ہے  اور لوکل مارکیٹ میں ٹویوٹا ریوو اور اِسوزو ڈی-میکس کا براہِ راست مقابلہ کرے گی۔

پہلی نظر میں اگر آپ زوتیے Z100 کو سوزوکی آلٹو کی ہم شکل محسوس کر رہے ہیں تو آپ کی نظر قابل تعریف ہے۔ زوتیے Z100 درحقیقت سوزوکی آلٹو کی ساتویں جنریشن ہی کی طرز پر بنائی گئی ہے۔

مزید برآں ، یہاں یہ بتانا ضروری ہے کہ یہ کار 2012 شنگھائی آٹو شو کے دوران پیش کی گئی ، اور اسے ستمبر 2013 میں چینی مارکیٹ میں لانچ کیا گیا تھا۔

کابینہ نے حال ہی میں پاکستان کی نیشنل الیکٹرک وہیکل پالیسی (NECP) کی باقاعدہ منظوری دی تھی۔ وزیر اعظم کے مشن کے مطابق پاکستان ملک میں الیکٹرک کاریں لا کر ماحول میں کاربن اثرات کو کم کرنے کا عزم رکھتا ہے۔ ابتدائی مرحلے میں 2030ء تک ملک میں چلنے والی 30 فیصد گاڑیوں کو الیکٹرک پر منتقل کرنے کا منصوبہ ہے۔ وزیر اعظم کے مشیر برائے ماحولیاتی تبدیلی ملک امین اسلم نے کہا کہ مستقبل میں الیکٹرک کاروں کی جانب منتقلی کے بعد پاکستان سالانہ تیل درآمدات میں 2 ارب ڈالرز بچائے گا۔ مزید یہ کہ دھواں چھوڑنے والی گاڑیوں سے نکلنے والے کاربن کے مضر اثرات بھی الیکٹرک گاڑیوں کی مدد سے کم ہوں گے۔ پاکستان اس وقت عالمی ایئر انڈیکس درجہ بندی میں خطرناک مقام پر کھڑا ہے۔ ہوا کا معیار، خاص طور پر شہری علاقوں میں، بڑھتی ہوئی گاڑیوں اور صنعتوں سے نکلنے والے دھوئیں کی وجہ سے بدترین حالت تک پہنچ چکا ہے۔ اس لیے حکومت الیکٹرک گاڑیوں کی جانب منتقل ہونا چاہتی ہے اور پہلے مرحلے میں موٹر سائیکلوں اور تین پہیوں والی گاڑیوں کو بیٹریوں پر منتقل کیا جائے گا۔ 

دوسری جانب ملک میں کام کرنے والے موجودہ  آٹو مینوفیکچررز پہلے ہی الیکٹرک وہیکل پالیسی کی مخالفت کر چکے ہیں کیونکہ ان کا ماننا ہے کہ یہ ملک میں کام کرنے والے اداروں کو براہِ راست متاثر کرے گی۔ البتہ حکومت نے یقین دلایا ہے کہ اس سلسلے میں تمام اسٹیک ہولڈرز کو اعتماد میں لیا جائے گا اور الیکٹرک وہیکل پالیسی پر پیش رفت بغیر اختلاف کے جاری رہے گی۔ 

اس حوالے سے اپنے خیالات نیچے تبصروں میں پیش کیجیے اور پاکستان کی آٹوموبائل انڈسٹری کے حوالے سے مزید خبروں کے لیے پاک ویلز کے ساتھ رہیے۔ 


Google App Store App Store

Apart from being an Electrical Engineer by profession, he is an automotive content writer at PakWheels, a web designer and a photographer.

Top