چند ڈرائیونگ قوانین جن کی پابندی کرنی چاہیے

tips-driving

جو شخص گاڑی رکھتا ہے اسے ان حفاظتی اقدامات کا بھی علم ہونا چاہیے جن کی پیروی ضروری ہے، نہ صرف ڈرائیونگ کے دوران بلکہ اس سے پہلے اور بعد بھی۔ لیکن معلوم ہونے کے بعد بھی کبھی کبھار ہم ان سادہ قوانین کو بھول جاتے ہیں جو ہمیں کسی مسئلے سے دوچار کر سکتے ہیں۔ اس لیے اس تحریر میں ہم نے ان ٹپس اور قوانین کو سادہ الفاظ میں پیش کرنے کی کوشش کی ہے۔ اگر آپ انہیں پہلے سے جانتے ہیں تو اب ان پر زیادہ توجہ دیں اور اگر آپ کو معلوم نہیں تو مجھے یقین ہے کہ یہ آپ کے لیے بہت مددگار ہوں گے۔ تو یہ ہیں چند نکات جن پر غور کرنا چاہیے:

ڈرائیونگ سے پہلے ایک سادہ سیفٹی چیک کریں۔ کار ہونے کی صورت میں یقینی بنائیں کہ ٹائروں میں مناسب ہوا موجود ہے، یقینی بنائیں کہ گاڑی اچھی حالت میں ہے یعنی کوئی چیز لیک نہیں ہو رہی، پچھلی اور اگلی لائٹیں صحیح حالت میں ہیں۔

گاڑی میں بیٹھیں تو اسٹارٹ کرنے سے پہلے آئینے سیٹ کریں۔ نہ صرف اس سے بلائنڈ اسپاٹس کم کرنے میں مدد ملے گی بلکہ یہ ڈرائیونگ کے دوران مددگار بھی ہوں گے۔

ذاتی حفاظت سب سے پہلے، اس لیے ہمیشہ سیٹ بیلٹ باندھیں۔

ہیڈلائٹس ہماری نظر کو بہتر بناتی ہیں، اور اس کے نتیجے میں ایک گاڑی دن کے مقابلے میں چار گنا زیادہ فاصلے سے نظر آ جاتی ہے۔

اسٹاپ کے اشارے پر رکےت ہوئے یقینی بنائیں کہ آپ پہلے بائیں اور پھر دائیں جانب دیکھیں، گاڑی کو سیدھا کریں اور آگے بڑھنے سے پہلے پھر بائیں جانب دیکھیں۔

اپنی آنکھوں کو سڑکوں پر رکھیں لیکن سائیڈ مررز کے ذریعے سڑک پر دونوں بھی نگاہ رکھیں۔

اگر آپ دو لین کی سڑک پر گاڑی چلا رہے ہوں تو درمیان میں رہیں۔

ہمیشہ ذہن میں رکھیں کہ دوسرا ڈرائیور کسی بھی وقت غلطی کر سکتا ہے اور خود کو ذہنی طور پر تیار رکھیں کہ اگر کوئی بھی ٹریفک قانون کی خلاف ورزی کرے تو آپ دوسرے ڈرائیورز یا راہگیروں کے لیے کسی حادثے یا پریشانی کا باعث نہ بن جائیں۔ مثلاً اگر کوئی گاڑی سرخ اشارے پر بھی نہیں رکھتی تو خود کو ٹھنڈا رکھیں اور کوئی مسئلہ کھڑا کیے بغیر جواب دیں۔

جب بھی گاڑی میں ایندھن بھروائیں تو انجن کمپارٹمنٹس ضرور دیکھیں کہ کہیں کوئی تیل/فلوڈ لیک تو نہیں ہو رہا۔

اپنی گاڑی کو سڑک پر تنہا مت چھوڑیں؛ اپنی مدد کے لیے آنے والے حکام کا انتظار کریں۔

اگر کسی گاڑی کے پیچھے چل رہے ہیں تو فاصلہ رکھیں، یہ احتیاط رات کے وقت سفر یا خراب موسمی صورت حال میں میں مزید بڑھائیں۔ یہ ضروری ہے کیونکہ اگر آپ کے آگے موجود گاڑی اچانک بریک مارتی ہے تو کسی حادثے کی وجہ سے آپ کی گاڑی کا تصادم نہ ہو جائے۔

ڈرائیونگ کے دوران موبائل فون کا استعمال نہ کریں۔ فون استعمال کرتے ہوئے توجہ بٹنے کی وجہ سے تصادم کا خدشہ تقریباً 400 گنا بڑھ جاتا ہے۔ اگر کوئی ہنگامی صورتحال ہو تو فون استعمال کرنے کے لیے گاڑی کو سائیڈ پر کھڑا کریں۔

پائلٹوں سے سیکھیں۔ طویل سفر کے گھر سے نکلیں تو راستے کی مناسب معلومات حاصل کرنا یقینی بنائیں اور گھر پر کسی فرد کے ساتھ سفری راستے کے حوالے سے رابطے میں رہیں تاکہ کسی بھی ناگہانی مسئلے سے بچ سکیں۔

ایمبولینس جیسی کسی بھی ہنگامی گاڑی کے آنے پر رک جائیں اور ہیزرڈ لائٹ کھول لیں تاکہ اس اور دیگر گاڑیوں کے لیے راستہ بنایا جا سکے۔

احتیاطی تدبیر کے طور پر ابتدائی طبی امداد کی کٹ یا طبّی ضرورت کی ادویات اور ہنگامی رابطہ نمبر، ذاتی رابطہ اپنے ساتھ رکھیں تاکہ ڈرائیونگ کے دوران ہنگامی صورت حال میں ان کا استعمال کیا جا سکے۔ یہ سب کچھ آسانی سے ملنے والی جگہ پر رکھیں۔

تیز رفتاری اور اس کے نتیجے میں حادثہ کا شکار ہونے سے بہتر ہے کہ تاخیر ہو جائے، ہمیشہ کچھ پہلے نکلیں تاکہ اپنی منزل پر بروقت پہنچ جائیں۔

جب آپ جب کئی لین کی سڑک پر چل رہے ہو اور کوئی متحرک گاڑی نہ ہو تو دائیں جانب چلیں اور ذہن میں رکھیں کہ بایاں حصہ گزرنے والوں کے لیے ہے۔

“نو-زون ایریا” میں بسوں اور ٹرکوں کے ساتھ ڈرائیونگ سے اجتناب کریں کیونکہ کئی جگہوں سے ان گاڑیوں کے ڈرائیور آپ کو نہیں دیکھ سکتے۔ یاد رکھیں اگر آپ ٹرک کے پیچھے دیکھنے والے آئینوں میں ڈرائیور کو نہیں دیکھ سکتے تو وہ بھی آپ کو نہیں دیکھ سکتا!

ٹرک دائیں جانب بڑے موڑ لے سکتے ہیں اس لیے ان کے قریب ڈرائیونگ کرتے ہوئے احتیاط کریں۔

بارش، برف باری یا دوسرے ناسازگار موسم میں ڈرائیونگ زیادہ بڑا چیلنج ہے۔ ان حالات میں رفتار کو کم رکھیں تاکہ آپ گاڑی کا کنٹرول نہ کھو بیٹھیں۔

ناسازگار موسم میں رفتار کم کرنے کے بجائے اچانک بریک نہيں دبانے چاہئیں کیونکہ اچانک بریک سے آپ گاڑی پر کنٹرول کھو بیٹھیں گے۔ پھر یہ بھی مت بھولیں کہ رفتار زیادہ ہو تو گاڑی کے وزن کی وجہ سے رکنے کا فاصلہ بڑھ جاتا ہے۔ اس لیے اچانک بریک لگاتے ہوئے ان نکات کو ذہن میں رکھیں۔

ہماری طرف سے اتنا ہی، اپنی رائے نیچے تبصروں میں پیش کریں۔


Top