سردیوں میں گاڑی کو بہترین حالت میں رکھنے کے لیے کچھ تجاویز


موسمِ گرما ختم ہونے والا ہے اور اب ہمارے قدم سردیوں کی جانب بڑھ رہے ہیں، اس لیے تجویز کیا جاتا ہے کہ اس موسم میں رواں، پُرسکون اور بے فکر ہوکر ڈرائیونگ کرنے کے لیے اپنی کار کے چند اہم پہلو ضرور دیکھ لیں۔ مندرجہ ذیل ٹپس آپ کی گاڑی کو سردیوں کے دوران بہترین کنڈیشن میں رکھنے میں مدد دیں گی۔ یہ احتیاطی تدابیر سیفٹی کے لیے بھی بہت ضروری ہیں کیونکہ یہ آپ کو مالی نقصان کے علاوہ حادثے سے بھی بچائیں گی۔ 

بیٹری 

بیٹری کو بہترین سطح پر رکھنے کے لیے آپ کو وہ کرینکنگ ایمپیئرز چیک کرنے کی ضرورت ہے جو گاڑی اسٹارٹ کرنے کے لیے درکار ہوتے ہیں۔ اگر کرینکنگ ایمپیئرز بہترین سطح پر نہیں ہیں تو آپ کی گاڑی اسٹارٹ ہونے میں مشکلات کا سامنا کرے گی یا سرے سے ہی اسٹارٹ نہیں ہوگی۔ بیٹری کو مکمل چارج کی ضرورت ہوتی ہے اور سردیوں میں اسٹارٹ کرنے کے لیے ضروری ایمپیئرز لازمی ہونے چاہئیں۔ ایک کمزور بیٹری راستے بھر میں مسائل کا سبب بنے گی اور بہتر یہی ہے کہ موسمِ سرما کے آغاز پر کمزور بیٹری کو بدل لیا جائے۔ 

کولینٹ 

کولینٹ یا اینٹی فریز آپ کی کار کے لیے ضروری چیز ہے کیونکہ یہ سردیوں میں جمتا نہیں اور 80,000 کلومیٹرز کی طویل زندگی رکھتا ہے۔ کولینٹ پانی کے بجائے ریڈی ایٹر میں ہونا چاہیے کیونکہ سردیوں میں جمنے پر پانی پھیلتا ہے۔ اس سے آپ کی گاڑی کو نقصان پہنچ سکتا ہے۔ اینٹی-فریز یا کولینٹ جمتا نہیں اور اس لیے پھیلتا نہیں۔ نقصان انجن کو یا خود ریڈی ایٹر کو پہنچ سکتا ہے۔ اپنی کار اسٹارٹ کرنے کے بعد ڈرائیونگ سے پہلے ہمیشہ انتظام کریں۔ کار کو اتنا گرم ہونے دیں کہ وہ باآسانی چل سکے۔ 

ٹائرز 

جب آپ کی کار کے ٹائرز ٹھنڈے ہوں تو ان میں موجودایئر پریشر کو چیک کریں۔ سردیوں میں ہوا ٹھنڈی ہو جاتی ہے تو ٹائروں کے اندر موجود ہوا کا دباؤ کم ہو جاتا ہے۔ جب آپ اپنی گاڑی کو ڈرائیو کے لیے سڑک پر لاتے ہیں تو ٹائروں میں موجود ہوا پھیل جاتی ہے۔ اپنے ذہن میں رکھیں کہ ٹائروں میں موجود پریشر کو تھوڑا سا کم کرنا ہے تاکہ جب ہوا پھیلے تو ٹائر پھٹ نہ جائے۔ شمالی علاقوں کا سفر کرنے والے افراد ٹائروں میں پریشر کو بہترین سطح پر رکھیں ورنہ ٹائر تبدیل ہوتے درجہ حرارت میں پھٹ سکتے ہیں۔ پھر اگر آپ برفانی صورت حال میں شمالی علاقوں کو جا رہے ہیں تو گرمیوں کے بجائے سردیوں کے ٹائرز استعمال کریں۔ اس سے آپ کی گاڑی کو اضافی استحکام ملے گا اور یہ برف میں پھسلے گی نہیں۔ 

وائپر بلیڈز 

اگر آپ برفانی علاقوں میں رہتے ہیں تو برف ہٹانے سے پہلے وِنڈ اسکرین کے وائپرز ہرگز نہ چلائیں۔ بصورت دیگر وِنڈ اسکرین پر خراشیں آ جائیں گی اور وائپر موٹرز خراب ہوسکتی ہیں۔ وِنڈ اسکرین وائپر موٹرز بسا اوقات مہنگی پڑ جاتی ہیں اور آپ کی جیب پر بھاری پڑ سکتی ہیں۔ 

وِنڈ اسکرین 

اگر آپ کی وِنڈ اسکرین پر برف جمی ہوئی ہے تو پگھلانے کے لیے اس پر گرم پانی ہرگز نہ ڈالیں۔ کیونکہ گرم پانی وِنڈ اسکرین کو چٹخا دے گا اور آپ کو بہت مالی نقصان ہو سکتا ہے۔ وِنڈ اسکرین سے برف کو حفاظت سے اور مناسب انداز میں ہٹانے کے لیے ایئر کنڈیشننگ اور ڈی فراسٹر کو آن کریں۔ ایئر کنڈیشننگ کو زیادہ سے زیادہ سیٹنگ پر رکھیں۔ 

ایسی ہی مزید معلومات ہمارے ساتھ رہیے اور اپنے تبصرے نیچے موجود حصے میں پیش کیجیے۔


Google App Store App Store

Top