اسلام آباد ٹریفک پولیس دیکھ رہی ہے: قانون توڑا تو چالان پہنچے گا گھر پر

itp safecity traffic fines

شہر میں ٹریفک قوانین کی خلاف ورزیوں کو روکنے کے لیے اسلام آباد ٹریفک پولیس (ITP) نے اپنے سیف سٹی پروجیکٹ کے تحت ایک اور منصوبہ متعارف کروا دیا ہے۔ تفصیلات کے مطابق اگر کوئی کسی ٹریفک قانون یا ضابطے کی خلاف ورزی کرتا ہے اور وقوعے پر کسی ٹریفک وارڈن کی عدم موجودگی کی وجہ سے موقع سے فرار ہو جاتا ہے، تو اسے اپنے گھر پر ٹکٹ/چالان موصول ہوگا۔ پولیس پہلے سے نصب شدہ کیمروں بمع اسپیڈ کیمروں کا استعمال کرے گی جنہیں انتظامیہ کے مطابق شہر بھر میں نصب کیا جاچکا ہے، اس لیے قانون توڑنے سے پہلے سوچ لیں۔

انتظامیہ نے اس نئے منصوبے کا اعلان اپنے آفیشل فیس بک اکاؤنٹ پر کیا ہے، جو کچھ یوں ہے:

“ہوشیار باش!  اسلام آباد میں سیف سٹی پروجیکٹ کے ذریعے ٹریفک قوانین کی خلاف ورزی کرنے پر چالان کا آغاز کر دیا گیا ہے۔ چالان/ٹکٹ اب آپ کے گھر پہنچے گا۔”

یہ بلاشبہ ITP کا ایک مثبت قدم ہے البتہ یہ سوالات برقرار ہیں کہ یہ کتنا مؤثر ہوگا۔ چند بنیادی سوالات مندرجہ ذیل ہیں:

پہلا سوال یہ ہے کہ اگر کوئی دوسرے شہر سے تعلق رکھتا ہو اور قانون توڑ کر فرار ہو جائے تو ادارہ اسے کس طرح چالان بھیجے گا؟ دوسرا، اگر کوئی جعلی نمبر پلیٹ استعمال کر رہا ہو تو اسے ٹکٹ کس طرح بھیجا جائے گا، اس کے گھر کا اصل پتہ ڈھونڈنا ایک طرف۔ کبھی کبھار لوگ ETO میں درج شدہ پتے پر نہيں رہتے (تبدیلی پتہ)۔ ETO کا ریکارڈ کتنا اپڈیٹڈ ہے، یہ بھی ایک سوال ہے۔ دیکھتے ہیں ITP ان اہم مسائل سے کیسے نمٹتی ہے۔

گزشتہ چند ماہ میں اسلام آباد ٹریفک پولیس نے شہر کے باسیوں کے لیے کئی نئی منصوبے اور پروگرام متعارف کروائے ہیں تاکہ انہیں شعور دیا جائے اور شہر میں سفر کے دوران سکھ کا سانس نصیب ہو۔ اتھارٹی شہر میں پارک سکیور، ای-ٹکٹنگ نظام اور ورچوئل ڈرائیور ٹریننگ سمولیٹرز متعارف کروا چکی ہے۔

اب تک صرف اتنا ہی، آپ ان منصوبوں کے بارے میں کیا سوچتے ہیں، تبصروں میں ہمیں ضرور بتائیے۔


My name is M. Ali Laghari and I love to read and write about Cars.

Top